چچا کی بھتیجی سے مبینہ زیادتی ، بھتیجی حاملہ ہو گئی

مظفر گڑھ میں ایک درندہ صفت شخص نے اپنی بھتیجی کو ہی جنسی ہوس کا نشانہ بنا ڈالا جس کے نتیجے میں متاثرہ لڑکی حاملہ ہو گئی۔ لڑکی کی مدعیت میں مقدمہ بھی درج کر لیا گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق پنجاب کے ضلع مظفر گڑھ میں چچا کے مبینہ ریپ سے بھتیجی حاملہ ہوگئی۔قومی اخبار میں شائع رپورٹ میں بتایا گیا کہ تھانہ روہیلانی میں لڑکی کی مدعیت میں درج مقدمے کے مطابق اس کے والد کا 16/17 سال قبل انتقال ہوگیا تھا جس کے بعد والدہ نے دوسری شادی کرلی تھی اور وہ بھی ان کے ساتھ ہی رہائش پذیر تھی۔
ایف آئی آر میں لڑکی کا کہنا تھا کہ میرے چچا بشیر احمد بھی گھر کے نزدیک رہائش پذیر تھے جنہوں نے 8 ماہ قبل مجھے اس بہانے سے اپنے گھر بلایا کہ میری بیوی ناراض ہو کر گھر سے چلی گئی ہے لہٰذا کھانا پکا کر دے جاؤ۔ اس موقع پر چچا نے مجھے جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا اور مزاحمت کرنے پر جان سے مارنے کی دھمکی دی اور کہا کہ کسی کو بتانے کی صورت میں مجھے قتل کر دیا جائے گا۔

متاثرہ لڑکی کا کہنا تھا کہ میں نے خوف کی وجہ سے کسی سے بھی اس واقعہ کا تذکرہ نہیں کیا تاہم اب حاملہ ہونے کے بعد والدہ کو شک ہوا تو میں نے سارا واقعہ اپنی والدہ کو سنا دیا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ تعزیرات پاکستان کی دفعہ 376 (آئی) کے تحت مقدمہ درج کرنے کے بعد تفتیش کا آغاز کردیا گیا ہے۔ جبکہ اس سلسلے میں ڈسٹرک ہیڈ کوارٹر اسپتال مظفر گڑھ میں لڑکی کا میڈیکل بھی کروایا گیا جس کی روشنی میں مزید کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔ یاد رہے کہ اس سے پہلے رواں ماہ کے اوائل میں ساہیوال کے ایک گاؤں میں پولیس نے ایک شخص کو مبینہ طور پر اپنی بیٹی کا ریپ کرنے کے الزام میں گرفتار کیا تھا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے